وفاقی ترقیاتی ادارے کا اسلام آباد میں نصب آبی سہولیات شمسی توانائی پر منتقل کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد: کیپٹل ڈیویلپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) نے شہر میں پانی کی تمام تنصیبات کو جدید سولر سسٹم پر منتقل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اس سلسلے میں شعبہ واٹر سپلائی کی جانب سی ڈی اے ڈی ڈبلیو پی میٹنگ میں 30 ملین روپے کا پی سی ٹو منظور کرلیا گیا ہے اور کنسلٹنٹ ہائر کرنے کا عمل شروع کیا جارہا ہے۔

سی ڈی اے کی جانب سے جاری تفصیلات کے مطابق ابتدائی طور پر پونا فقیراں، سنگجانی، آر ایل ون سمیت دیگر واٹر ورکس کے مختلف فیزز کو جدید سولر سسٹم پر منتقل کیا جارہا ہے۔

اسی طرح اگلے فیز میں تمام ٹیوب ویلز کو بھی جدید سولر سسٹم پر منتقل کر دیا جائے گا۔

واضح رہے کہ ان اقدامات سے نہ صرف توانائی کی بچت ہوگی بلکہ اخراجات میں بھی خاطر خواہ کمی ہوگی۔چیئرمین کپیٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی اور وفاقی حکومت کے وژن کے مطابق توانائی کی بچت میں اضافے کے لئے یہ ایک انتہائی اہم قدم ہے۔

جس سے نہ صرف کروڑوں روپے کی بچت ہوگی بلکہ توانائی بحران پر بھی قابو پانے میں مدد ملے گی۔

مزیدبرآں 10 کروڑ روپے کی لاگت سے واٹر ورکس پر جدید پمپس کو پرانے پمپس سے تبدیل کرنے کا عمل شروع کر دیا گیا ہے جبکہ چار واٹر ورکس پر جدید پمپس کی تنصیب کا عمل مکمل کرلیا گیا ہے۔

علاوہ ازیں کپیٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی انتظامیہ کی ہدایت پر شعبہ واٹر سپلائی کی جانب سے شہر میں مختلف مقامات پر رواں برس 32 نئے ٹیوب ویلز بھی نصب کئے گئے ہیں۔

جبکہ مزید دس نئے ٹیوب ویلز پر کام تیزی سے جاری ہے جن کو جلد ہی آپریشنل کرکے سسٹم میں شامل کرلیا جائے گا۔

اس موقع پر کپیٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی انتظامیہ نے بھی شہریوں سے تعاون کی اپیل کی ہے کہ وہ پانی کے استعمال میں احتیاط برتیں اور پانی کے ضیاع سے اجتناب کریں تاکہ زیادہ سے زیادہ پانی شہریوں کے استعمال میں لایا جاسکے۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کیلئے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔

About Zeeshan Javaid

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔