ڈیجیٹل اکانومی جی ڈی پی کو 40 بلین ڈالرتک لے کے جایئگا

digital economy

اسلام آباد:          پاکستان میں ڈیجیٹل اکانومی مقامی معیشت کو مستحکم کرنے کے علاوہ ، ملک کی مجموعی گھریلو مصنوعات (جی ڈی پی) کو 40 ارب ڈالر کی سطح تک بڑھانے کے وسیع امکانات رکھتی ہے۔

وزارت تجارت کے سینئر عہدیدار کے مطابق ، ‘ڈیجیٹل اکانومی’ کے ارتقاء کے ذریعے  پاکستان تجارت اور ای کامرس ، تعلیم اور ملک میں معاشی نمو کے لئے صحت سمیت تمام بڑے شعبوں میں اپنا اقتصادی ایجنڈا تیزی سے حاصل کرسکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کو ڈیجیٹل معیشت میں بڑے پیمانے پر کام کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ ملک کی عالمی موبائل مارکیٹ میں بڑی تعداد میں حصہ ہے ، جس میں 160 ملین سے زیادہ موبائل فون صارفین اور 150 ملین انٹرنیٹ استعمال کنندہ ہیں۔

انہوں نے کہا: "ہم لوگوں کو تیزی سے خدمات کی فراہمی کے لئے جدید ڈیجیٹل ٹولزکے ذریعے مختلف شعبوں میں عوامی خدمات کو بہتر بناسکتے ہیں۔” سینئر عہدیدار نے کہا کہ پاکستان ایک زرعی ملک ہے اور جدید ڈیجیٹل میکانزم کے ذریعہ کاشتکار اور زراعت کی بہتری کیلئے چین کے زرعی ماڈل سے استفادہ حا صل کیا جا سکتا ہے۔

About Maham Tahir

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔