قومی اقتصادی کونسل کی ایگزیکٹو کمیٹی نے ایم ایل ون منصوبے کا پی سی ون منظور کر لیا

قومی اقتصادی کونسل کی ایگزیکٹو کمیٹی نے پاکستان ریلوے کے ایم ایل ون منصوبے کے پی سی ون کی منظوری دے دی۔ منصوبے پر 9 ارب 80 کروڑ روپے لاگت آئے گی۔

حکام کے مطابق وفاقی وزیرِ خزانہ اسحاق ڈار کی زیرِ صدارت قومی اقتصادی کونسل کی ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں پاکستان ریلوے کے موجودہ ایم ایل ون منصوبے کی اپ گریڈیشن کے لیے ترمیم شدہ پی سی ون کی منظوری دی گئی۔

حکام نے بتایا کہ ایم ایل ون منصوبہ کراچی سے شروع ہو گا، پھر کوٹری/حیدرآباد، روہڑی، ملتان،لاہور اور راولپنڈی سے ہوتا ہوا پشاور پر اختتام پذیر ہو گا۔

حکام کے مطابق قومی اقتصادی کونسل کی ایگزیکٹو کمیٹی نے کراچی سرکلر ریلوے منصوبے پر بھی غور کیا اور اس کی منظوری دی۔ اس منصوبے پر دو کھرب 92 ارب 38 کروڑ روپے لاگت آئے گی۔

کمیٹی نے آزاد جموں و کشمیر کے ضلع نیلم میں 48 میگاواٹ کے شاونٹر ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کے قیام پر بھی گفتگو کی اور اصولی طور پر منصوبے کی منظوری دی۔ حکام نے بتایا کہ مذکورہ منصوبہ دریائے برال کے نچلے حصے پر تعمیر کیا جائے گا جو دریائے نیلم سے منسلک ہوتا دریا ہے۔

حکام کے مطابق اجلاس میں وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی، ترقی و خصوصی اقدامات احسن اقبال، وفاقی وزیرِ تجارت سید نوید قمر، بلوچستان کے وزیر منصوبہ بندی و ترقی نور محمد دمڑ، وفاقی سیکرٹریز، فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کے چیئرمین اور دیگر سینئر افسران نے شرکت کی۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لئے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔

About Rizwan Ali Shah

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے