آسٹریلوی شہریوں کی لوکیشن ہسٹری آن رکھنے پر گوگل کو 6 کروڑ ڈالر جرمانہ

Google BI

آسٹریلوی مقابلے پر نظر رکھنے والے ادارے ٹیک جائنٹ صارفین کے مقام کا ڈیٹا اکھٹا کرنے اور گمراہ کرنے پر گوگل نے 60 ملین ڈالر کا جرمانہ ادا کرنے پر آمادگی کا اظہار کیا ہے۔

آسٹریلیا کی وفاقی عدالت کے مطابق گزشتہ سال اپریل میں گوگل نے صارفین کے ڈیٹا سے متعلق قوانین کی خلاف ورزی کی۔ جس کے مطابق کمپنی نے اینڈرائیڈ آپریٹنگ سسٹم پر چلنے والے موبائل آلات کے ذریعے ان کے مقام کے بارے میں ذاتی معلومات اکٹھی کرنے سے متعلق گمراہ کیا۔ جبکہ صارفین کی لوکیشن ہسٹری ’آف‘ پر سیٹ تھی اور ان کی ویب اور ایپ کی سرگرمی ’آن‘ تھی۔

کمپنی کو اس طرز عمل سے متعلق دیگر دو صارفین کے قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے بھی پایا گیا۔

آسٹریلوی کمپیٹیشن اینڈ کنزیومر کمیشن نے عدالت کے اس فیصلے کو ڈیجیٹل پلیٹ فارمز کے لیے ایک واضح پیغام قرار دیا تاکہ صارفین کو یہ واضح کیا جا سکے کہ ان کے ڈیٹا کے ساتھ کیا ہوتا ہے۔

جمعہ کے روز وفاقی عدالت نے مختصر سماعت کے دوران فریقین کے درمیان 6 کروڑ ڈالر کے جرمانے پر اتفاق کو "منصفانہ اور معقول” قرار دیا۔

 

مزید خبروں اور اپڈیٹس کیلئے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔