موسمیاتی تبدیلی سے نمٹنے کے لیے گلوبل شیلڈ فنڈنگ کے اجراء کا امکان

مصر میں جاری کوپ 27 کانفرنس میں موسمیاتی تبدیلی سے سب سے زیادہ متاثرہ ممالک کے لیے جی 7 گلوبل شیلڈ فنڈنگ اعلان کیا گیا۔ بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق پاکستان موسمیاتی تبدیلی سے متاثرہ ان چند ممالک میں سے ہے جنہیں سب سے پہلے یہ فنڈنگ دی جائے گی۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق پاکستان، گھانا اور بنگلہ دیش ان چند ممالک میں شامل ہیں جنہیں یہ فنڈنگ ملنے کا امکان ہے۔

خبر رساں ادارے کے مطابق جی 7 گلوبل شیلڈ کا مقصد موسمیاتی تبدیلی کے خطرات سے دوچار ممالک کو فنڈنگ فراہم کرنا ہے تاکہ ان کو سیلاب یا خشک سالی کے باعث حالات سے نمٹنے میں مدد مل سکے۔

ورلڈ بینک کی حالیہ رپورٹ کے مطابق پاکستان میں موسمیاتی تبدیلی سے پیدا ہونے والی ہیٹ ویو یعنی گرمی کی لہر اور بعد ازاں سیلاب آنے کے باعث 1700 سے زائد افراد جان کی بازی ہار گئے اور تقریباً 80 لاکھ سے زائد افراد بے گھر ہوئے۔ ورلڈ بینک کی رپورٹ کے مطابق سیلاب کی تباہ کاریوں کے باعث  انفراسٹرکچر، فصلوں اور مویشیوں کو بڑے پیمانے پر نقصان پہنچا جس سے ملک بھر میں تقریباً 3 کروڑ 30 لاکھ افراد متاثر ہوئے۔ حالیہ سیلاب سے ملک کو ہونے والے نقصان کا تخمینہ 30 ارب ڈالر لگایا گیا ہے۔

ورلڈ بینک کی جانب سے جاری رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ کلائمیٹ چینج یعنی موسمیاتی تبدیلی سے 2050 تک پاکستان کا جی ڈی پی 18 سے 20 فیصد کم ہونے کا امکان ہے جس سے معاشی ترقی میں رکاوٹ پیدا ہونے کے ساتھ ساتھ غربت کو کم کرنے میں بھی خاصی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

موسمیاتی تبدیلی سے نمٹںے پر غور کرنے کے لیے مصر میں منعقد ہونے ہونے والی کوپ 27 کانفرنس کا آغاز بروز اتوار 13 نومبر کو ہوا۔ یہ کانفرنس 18 نومبر تک جاری رہے گی۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کیلئے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔

About Rizwan Ali Shah

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے