پاکستان اسٹاک ایکسچینج نے رئیل اسٹیٹ کو سیکٹر قرار دے دیا

پاکستان اسٹاک ایکسچینج نے رئیل اسٹیٹ کو سیکٹر قرار دے دیا

اسلام آباد: پاکستان اسٹاک ایکسچینج کی طرف سے جاری ایک نوٹیفیکیشن میں کہا گیا ہے کہ ایسی پراپرٹی کمپنیاں جو رئیل اسٹیٹ لسٹڈ کمپنیوں کے زمرے میں نہیں آتیں، ان  کے لیے "پراپرٹی” کے نام سے ایک نیا سیکٹر شروع کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔

اس سیکٹر کے شامل ہونے سے پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں سیکٹرز کی کُل تعداد 36 ہو گئی ہے۔

"پراپرٹی” کے سیکٹر میں فی الحال تین کمپنیوں کو رکھا گیا ہے۔ ان میں جاویدان کارپوریشن لمیٹڈ، پیس (پاک) لمیٹڈ اور ٹی پی ایل پراپرٹیز لمیٹڈ شامل ہیں۔

پاکستان اسٹاک ایکسچینج نے رئیل اسٹیٹ کو سیکٹر قرار دے دیا

رئیل اسٹیٹ سیکٹر ایس ای سی پی میں لسٹڈ کمپنیوں کے اعتبار سے سب سے بڑا سیکٹر ہے۔ علاوہ ازیں رئیل اسٹیٹ کو اوورسیز پاکستانیوں کی سرمایہ کاری کے لئے بھی سب سے موزوں سیکٹر شمار کیا جاتا ہے۔

ماہرین کے مطابق اگر حکومت رئیل اسٹیٹ سیکٹر کے مسائل کے حل میں اہم کردار ادا کرے تو اس میں سرمایہ کاری کو کئی گنا بڑھایا جا سکتا ہے۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کیلئے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔