آئندہ تین سالوں میں پاکستان کی تعمیراتی صنعت کی اوسط شرح نمو 5.1 فیصد تک پہنچنے کا امکان

اسلام آباد: پاکستان کی تعمیراتی صنعت کے رجحانات اور مواقع سے متعلق ایک تحقیقی رپورٹ جاری کر دی گئی ہے جس کے مطابق آئندہ تین سالوں میں پاکستان کی تعمیراتی صنعت کی اوسط شرح نمو 5.1 فیصد تک پہنچنے کا امکان ظاہر کیا گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق سال 2022 سے 2025 تک آئندہ تین سالوں میں چین پاکستان اقتصادی راہداری کے زیرِ انتظام تعمیراتی منصوبوں میں تیزی کے باعث پاکستان کی تعمیراتی صنعت کی سالانہ بنیادوں پر اوسط شرح نمو میں 5.1 فیصد تک نمایاں اضافے کا امکان ہے۔

رواں مالی سال کے 8 کھرب 48 ارب روپے کے وفاقی بجٹ میں تعلیم اور سروسز کے شعبے کے لیے 91 ارب 90 کروڑ روپے، ہاؤسنگ اور کمیونٹی ڈیویلپمنٹ کے لیے 34 ارب 60 کروڑ روپے، صحت کی سہولیات کے لیے 28 ارب 40 کروڑ روپے، مواصلات اور تعمیراتی صنعت کے لیے 26 ارب 70 کروڑ روپے جبکہ 20 ارب 80 کروڑ روپے توانائی کے شعبے کے لیے مختص کیے گئے تھے۔

وفاقی ادارہ شماریات کے مطابق گذشتہ سال 2021 میں تعمیراتی صنعت کو غیر یقینی حد تک فروغ ملا ہے جس کی وجہ سے کورونا وباء کی پابندیوں کے باوجود مذکورہ شعبے سے وابستہ دیگر صنعتوں کے سالانہ منافع میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کیلئے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔

About Zeeshan Javaid

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔