بلوچستان حکومت کا سات سیاحتی مقامات بنانے کا اعلان

کوئٹہ: بلوچستان حکومت نے صوبے میں سیاحت کے فروغ کے لیے سات مقامات تیار کرنے کا اعلان کردیا جس کے لیے ایک ارب کی رقم مختص کردی گئی ہے۔

وزیرِ اعلیٰ بلوچستان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر یہ اعلان کرتے ہوئے کہا کہ یہ قدم صوبے میں اور خصوصاً اِس کے ساحلی علاقوں میں سرمایہ کاری اور سیاحت کے فروغ کے لیے لیا گیا ہے۔
اُن کا کہنا تھا بلوچستان حکومت نے ساحلی پٹی کی تعمیر و ترقی کے لیے 150 ملین جبکہ صوبے میں سات سیاحتی مقامات بنانے کے لیے کُل ایک ارب کی رقم مختص کردی ہے۔
اس معاملے پر بات کرتے ہوئے وزیرِ اعظم کے معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات لیفٹینٹ جنرل ریٹائرڈ عاصم سلیم باجوہ نے بھی جنوبی بلوچستان کی ترقی کے لیے کی جانے والی کوششوں کا اعتراف کیا۔
انہوں نے کہا کہ فلہال حکومت کی توجہ صوبے میں سماجی و اقتصادی ترقی کے لیے سڑکوں کی تعمیر پر ہے۔ ان کا کہنا تھا ہوشاب تا آواران تا خضدار اور آواران تا بیلا روڈ پراجیکٹ خطے میں مثبت تبدیلیاں لائیں گے۔
اس سے قبل وزیرِ اعظم عمران خان نے قومی ترقیاتی کونسل کے دوسرے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے بلوچستان میں جاری ترقیاتی منصوبوں کا جائزہ لیا۔
اجلاس میں صوبے میں جاری سڑکوں کی تعمیر، آبی وسائل کے بہتر استعمال، زراعت، توانائی اور ساحلی پٹی پر جاری ترقیاتی منصوبوں کا جائزہ لیا گیا۔
اِس اجلاس میں چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ، وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی، وزیرِ منصوبہ بندی اسد عمر، وزیرِ صنعت و پیداوار حماد اظہر، وزیرِ بحری اُمور علی زیدی، مشیر برائے خزانہ عبدل حفیظ شیخ اور وزیرِ اعلیٰ بلوچستان جام کمال شریک ہوئے۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانا بلاگ۔

About Maham Tahir

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔