نیو بلیو ایریا کے 12 پلاٹ 17 ارب روپے میں نیلام

اسلام آباد: نیو بلیو ایریا کے کمرشل پلاٹوں کی نیلامی جو کہ جناح کنوینشن سینٹر میں سی ڈی اے کے زیرِ اہتمام منعقد ہوئی، گزشتہ روز اختتام پذیر ہوگئی۔
حتمی نتائج کے مطابق نیلام عام میں 15 پلاٹوں کو آکشن کے لئے پیش کیا گیا کہ جن کے عوض سی ڈی اے کو کُل 20.3 ارب کی بولیاں موصول ہوئیں کہ جن میں سے آکشن کمیٹی نے 12 پلاٹوں پر موصول 17.05 ارب روپے کی بولیوں کو منظور کرلیا۔ اب ان کی حتمی منظوری سی ڈی اے بورڈ کی جانب سے دی جائے گی۔
نیلامی 15، 16 اور 17 جولائی کو منعقد ہوئی کہ جس نے بڑی تعداد میں سرمایہ کاروں کو راغب کیا۔ پہلے روز سی ڈی اے کو سات پلاٹوں کے عوض 11.7 ارب روپے کی بولیاں موصول ہوئیں مگر آکشن کمیٹی نے 4 پلاٹوں کے عوض 7.25 ارب روپے کی بولیوں کو منظور کیا۔ نیلامی کے دوسرے روز 4 پلاٹوں پر سی ڈی اے کو 5.54 ارب روپے موصول ہوئے جبکہ تیسرے روز 4 پلاٹ مزید فروخت ہوئے جن پر سی ڈی اے نے 4.26 ارب روپے منظور کیے اور یوں صرف 3 دنوں میں حکومت کو پلاٹس کے آکشن کی صورت میں 17.05 ارب موصول ہوئے۔
نیلامی کے لیے پیش کیا جانے والا سب سے بڑا پلاٹ 7000 مربع گز کا تھا اور حتمی نتائج کے مطابق سب سے زیادہ بولی 1.5 ملین فی مربع گز لگی۔
بڈنگ کے اختتام پر چیرمین سی ڈی اے نے کہا کہ نیلامی کی کامیابی اِس بات کا ثبوت ہے کہ سرمایہ کاروں کو حکومت اور سی ڈی اے کی پالیسیوں پر اعتماد ہے اور پاکستان میں ماحول کاروبار دوست ہے۔ اُنہوں نے نیلام عام میں شرکت کرنے پر سرمایہ کاروں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ سی ڈی اے تمام کامیاب بولی دہندگان کو ون ونڈو آپریشن کی سہولت فراہم کرے گی تاکہ نیلام شدہ پلاٹوں پر تعمیراتی سرگرمیوں کا آغاز ہو۔
یاد رہے کہ سی ڈی اے نے نیلامی میں زیادہ سے زیادہ سرمایہ کاروں کی دلچسپی حاصل کرنے کے لیے معتدد مراعات کا اعلان کیا تھا کہ جن میں رقم کی مکمل ادائیگی کے اُوپر 10 فیصد ڈسکاؤنٹ، بولی کی قبولیت کے اشوانس لیٹر جاری ہونے کے 30 دن کے اندر 25 فیصد کی پہلی قسط کی ادائیگی اور اُس کی ادائیگی پر ہی ماسٹر پلان کی منظوری اور مکمل ادائیگی پر کنسٹرکشن کی اجازت، پرو ریٹا بنیاد پر پیشگی انکم ٹیکس، 1000 مربع زمین سے کم کے لئے سو فیصد کوریج، 1000 مربع سے زائد پلاٹوں کے لیے 70 سے 75 فیصد گراؤنڈ کوریج، ہر پلاٹ کو سرکولیشن سٹرپ یعنی حد بندی کی سہولت، پارکنگ کی وسیع جگہ اور نئے بلڈنگ قوانین کا اطلاق شامل ہیں۔
سی ڈی اے کے مطابق نیلامی سے حاصل شدہ فنڈز سے اسلام آباد میں مزید ترقیاتی منصوبوں پر کام کیا جائے گا۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانا بلاگ۔

About Maham Tahir

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔