ڈپٹی کمشنر اسلام آباد نے 14 غیر قانونی رہائشی منصوبوں کی رجسٹریشن منسوخ کر دی

اسلام آباد: ڈپٹی کمشنر و رجسٹرار کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹیز عرفان نواز میمن نے اسلام آباد کی حدود سے باہر زیرِ تعمیر 14 رہائشی منصوبوں کی رجسٹریشن منسوخ کر دی ہے۔

حکام کے مطابق جن ہاؤسنگ سوسائٹیز کی رجسٹریشن منسوخ کی گئی ہے انہیں یہ ہدایات جاری کی گئی تھیں کہ جس صوبے کی حدود میں ان کے یہ پراجیکٹ زیرِ تعمیر ہیں وہیں ان منصوبوں کی رجسٹریشن یقینی بنائی جائے اور انہی اضلاع کے قوانین پر عملدرآمد کیا جائے۔

ڈی سی اسلام آباد عرفان نواز میمن نے ان ہاؤسنگ سوسائٹیز کے پراجیکٹ اسلام آباد کی حدود میں نہ ہونے کی وجہ سے انہیں وفاقی دارالحکومت کا نام استعمال کرنے سے بھی روک دیا ہے ۔

رجسٹرار کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹیز کی طرف سے جن سوسائٹیز کی رجسٹریشن منسوخ کی گئی ہے ان میں پی اے ای سی ایمپلائز کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی، دی ویٹرنز کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی، وزارت کامرس ایمپلائزکوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی، او جی ڈی سی ایمپلائز کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی، انجینئرز کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی، نیشنل پولیس فائونڈیشن کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی، او جی ڈی سی آفیسرز کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی، پی ڈبلیو ڈی ایمپلائز کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی، فارن آفس ایمپلائز کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی، دی ورک نو ورلڈ کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی، واپڈا ایمپلائز کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی، پاکستانی پروفیشنلز کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی، دی پاکستان ایمپلائز کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی اور فیڈرل شریعت کورٹ ایمپلائز کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی کے نام شامل ہیں ۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کیلئے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔

About Zeeshan Javaid

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔