جولائی 2022ء میں ہدف سے 15 ارب روپے زیادہ ٹیکس اکٹھا کیا: ایف بی آر

اسلام آباد: فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کا کہنا ہے کہ جولائی 2022ء میں مقررہ ہدف سے 15 ارب روپے زیادہ محصولات اکٹھے کیے گئے۔

ایف بی آر کی جانب سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ جولائی میں محصولات کا ہدف 443 ارب روپے تھا لیکن ادارے نے 15 ارب روپے زیادہ یعنی 458 ارب روپے کے محصولات اکٹھے کیے۔

ایف بی آر کے مطابق گذشتہ سال جولائی میں 417 ارب روپے کے محصولات جمع کیے گئے تھے۔

کھاتوں کی ایڈجسمنٹ کے بعد جولائی کے اعداد و شمار میں مزید بہتری کی پیش گوئی کی گئی تھی۔

اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ رواں سال جولائی میں ادا کیے گئے ریفنڈز کی رقم 28 ارب روپے تھی جبکہ گذشتہ سال جولائی میں 21 ارب روپے ریفنڈز کیے گئے تھے۔

ایف بی آر کا کہنا ہے کہ ٹیکس محصولات میں اضافہ فنانس ایکٹ 2022ء میں متعارف اقدامات کا نتیجہ ہے۔

محصولات میں مقامی ٹیکسوں کی شرح 55 فیصد جبکہ درآمدی ٹیکس کی شرح 45 فیصد رہی جبکہ مقامی ٹیکسوں میں بڑھوتری کی شرح تقریباَ 31 فیصد ہے۔

اعداد و شمار کے مطابق جائیدادوں کی فروخت پر پیشگی ٹیکس میں 118 فیصد اضافہ ہوا جبکہ تمباکو کی صنعت پر فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی میں 47 فیصد سے بھی زائد اضافہ ہوا۔

اعلامیے کے مطابق کسٹم ڈیوٹی کی مد میں جولائی 2022ء کے دوران 67 ارب روپے اکٹھے کیے گئے جبکہ انکم ٹیکس گوشواروں کی شرح 2020ء میں 30 لاکھ تھی جو اب 34 لاکھ تک پہنچ گئی ہے۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کیلئے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔

About Zeeshan Javaid

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔