چھوٹے دکانداروں پر 36 ہزار روپے سالانہ ٹیکس عائد

اسلام آباد: گرتی ہوئی مُلکی معیشت کو سہارا دینے کے لیے حکومت نے چھوٹے دکانداروں سے سالانہ بنیادوں پر 36000 روپے مستقل ٹیکس وصول کرنے کا فیصلہ کیا ہے تاہم ایسے تمام دکاندار جو 150 یونٹ سے کم بجلی استعمال کرتے ہیں وہ اس فیصلے سے مستثنیٰ ہوں گے۔

وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے ایک نیوز کانفرنس سے خطاب میں بتایا کہ کم بجلی استعمال کر نے والے دکانداروں کو فکس ٹیکس میں چھوٹ دی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ 150 یونٹ سے زائد بجلی استعمال کرنے والے چھوٹی دکانداروں سے ایک سال کا 36 ہزار روپے ٹیکس لیا جائے گا۔

جس دکاندار کی سالانہ آمدن 12 لاکھ روپے ہو گی وہ 36 ہزار روپے کا ٹیکس حکومتی خزانے میں جمع کرائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ گذشتہ دورِ حکومت کے پونے چار سال کے دوران بیرونی اور کمرشل بینکوں سے حاصل کردہ قرضوں میں 80 فیصد ہوا۔

مفتاح اسماعیل نے کہا کہ ملک کی خاطر ہم سب کو ٹیکس دینا ہو گا۔

ان کا کہنا تھا کہ ان کی ترجیح مہنگائی کنٹرول کرنا نہیں بلکہ ملک کو دیوالیہ ہونے سے بچانا ہے۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کیلئے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔

About Zeeshan Javaid

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔