خیبر پختونخوا حکومت کی ہائی ویز کی بحالی کے لیے 1.6 ارب روپے کی منظوری

پشاور: وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان کی زیر صدارت منعقدہ خیبرپختونخوا ہائی ویز کونسل کے اجلاس میں رواں مالی سال کے لیے خیبرپختونخوا ہائی ویز اتھارٹی کے سالانہ مینٹینینس پلان کے لیے 1.6 ارب روپے کے فنڈز کی منظوری دے دی گئی۔

اجلاس میں حکام کوہدایت کی گئی کہ گزشتہ مالی سال کے دوران مینٹینینس پلان کے تحت مختص فنڈز اور کاموں کی تفصیلی رپورٹ پیش کی جائے۔ ہائی ویز کی بحالی کے پلان پر 1.6 ارب روپے لاگت آئے گی جس میں سے 1.2 ارب روپے صوبائی حکومت جبکہ 47 کروڑ 20 لاکھ روپے اتھارٹی اپنے وسائل سے فراہم کرے گی۔

سالانہ مینٹننس پلان کے تحت صوبہ بھرمیں تقریباً تین ہزار کلومیٹر لمبی سڑکوں اور شاہراہوں کی دیکھ بھال کی جائے گی جس میں ان سڑکوں کی ضروری مرمت، سیلاب سے متاثرہ سڑکوں کی بحالی، نئے ٹول پلازوں کی تعمیر، اتھارٹی کیلئے فیلڈ آفس کی تعمیر و مرمت اور دیگر ترقیاتی کام شامل ہیں۔

علاوہ ازیں کونسل نے صوبے کے چار مختلف مقامات پر سڑکوں کو اتھارٹی کی تحویل میں دینے کی بھی منظوری دی تاکہ ان کے بہتر انتظام اور دیکھ بھال یقینی بنائی جاسکے۔

ان سڑکوں میں 35 کلومیٹر شرینگل پتراک روڈ، 126 کلومیٹر ٹوپی بونیر روڈ، 85 کلومیٹر تھاکوٹ دربند روڈ اور 61 کلومیٹر بنوں میرانشاہ روڈ شا مل ہیں۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔

About Zeeshan Javaid

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔