روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس کے ذریعے گذشتہ ماہ ترسیلاتِ زر کا حجم 4.356 ارب ڈالر تک پہنچ گیا

اسلام آباد: اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی حالیہ رپورٹ کے مطابق رواں سال مئی کے مہینے میں روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس (آر ڈی اے) کے ذریعے ترسیلاتِ زر کا مجموعی حجم 4.356 ارب ڈالر ریکارڈ کیا گیا۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق صرف ایک دن میں آر ڈی اے کے زریعے 5 کروڑ 70 لاکھ ڈالر ڈپازٹ کئے گئے جو کسی بھی ایک دن میں پاکستانی بینکوں کو ملنے والے سب سے زیادہ ڈپازٹ کا ریکارڈ ہے۔

مرکزی بینک کے مطابق مجموعی طور پر روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹ کے ذریعے موصول ہونے والی رقم 4.5 ارب ڈالر تک پہنچ گئی ہے۔ آر ڈی اے کے ذریعے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی جانب سے رقوم بھجوانے میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔

اسٹیٹ بینک کے اعدادو شمار کے مطابق گزشتہ ماہ 22 مئی تک 8 پاکستانی بینکوں کو آر ڈی اے کے ذریعے موصول ہونے والے ڈپازٹس کا مجموعی حجم 4.3 ارب ڈالر تھا جس میں ایک ماہ کے دوران 16 کروڑ 90 لاکھ ڈالر کا اضافہ ہوا ہے۔

اعدادو شمار کے مطابق 22 مارچ تک آر ڈی اے کے زریعے موصول شدہ رقوم کا مجومعی حجم 3.9 ارب ڈالر تھا جو 22 اپریل کو 4.1 ارب ڈالر 22 مئی تک 4.3 ارب ڈالر اور اب 21 مئی تک 4.5 ارب ڈالر تک پہنچ گئے ہیں۔

اسٹیٹ بینک آف پاکستان کا کہنا ہے کہ روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹ میں ڈپازٹرز کی تعداد 4 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے۔

اسٹیٹ بینک آف پاکستان  نے روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس پر صارفین کے اعتماد سے متعلق سروے کیا۔ سروے میں 116 ملکوں کے 10 ہزار افراد سے رائے طلب کی گئی۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق سروے میں 9 ہزار 777  افراد نے رائے دی۔ سروے میں روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹ کھولنے کی وجہ پوچھی گئی۔

سروے کے مطابق 70 فیصد لوگ اہل خانہ کی سپورٹ کیلئے روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹ استعمال کر رہے ہیں۔ سروے میں شامل 11 فیصد شرکاء روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس سے اسٹاک مارکیٹ میں سرمایہ کاری کر رہے ہیں۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق سروے میں 22  فیصد شرکاء روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس سے ریئل اسٹیٹ میں سرمایہ کاری کر رہے ہیں۔

روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس کے 36 فیصد ڈپازٹرز سعودی عرب سے ہیں جبکہ 23 فیصد ڈپازٹرز متحدہ عرب امارات سے ہیں۔

اس کے علاوہ یورپی یونین اور برطانیہ سے روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس کے 10 فیصد ڈپازٹرز ہیں۔

روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹ کھولنے والے 69 فیصد افراد اکثر جبکہ 9 فیصد افراد اسے بالکل استعمال نہیں کر رہے ہیں۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کیلئے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔

About Zeeshan Javaid

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔