سال 2021ء میں ریئل اسٹیٹ کا شعبہ منافع کے اعتبار سے فہرست میں دوسرے نمبر پر

اسلام آباد: منافع دینے والے اثاثوں کے حوالے سے ٹاپ لائن سیکیورٹیز کی جانب سے ایک تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ سال 2021ء میں بٹ کوائن کا منافع 87 فیصد رہا جبکہ دوسرے نمبر پر ریئل اسٹیٹ کا شعبہ رہا۔

ریئل اسٹیٹ کا قیمت بڑھنے کے لحاظ سے سالانہ منافع 23 فیصد رہا یعنی جس پلاٹ کی قیمت ایک کروڑ روپے تھی اب وہ ایک کروڑ 23 لاکھ روپے تک پہنچ چکی ہے۔

رپورٹ کے مطابق بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کیلئے متعارف کردہ روشن ڈیجٹل اکاؤنٹس کے ذریعے نیا پاکستان سرٹیفیکیٹ (ڈالر) کا منافع 18 فیصد اور پاکستانی روپے میں سرٹیفکیٹ کا منافع 11 فیصد رہا، اسہ طرح جن لوگوں کے اثاثے ڈالر میں تھے ان کی دولت میں پاکستانی روپے کی قدر گرنے کے باعث 11 فیصد اضافہ ہوا اور جن کے اثاثے سونے کی شکل میں تھے انہیں 10 فیصد فائدہ ہوا۔

تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ پاکستان میں بٹ کوائن میں اپنے اثاثے منتقل کرنے کا رجحان بڑھ رہا ہے۔ بٹ کوائن میں پاکستانیوں کے اثاثے 20 ارب ڈالر تک پہنچ چکے ہیں۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کیلئے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ

About Zeeshan Javaid

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔